TOP

تیرے درد کا اے دل ناتواں میں علاج کروں تو کیا کروں


تیرے درد کا اے دل ناتواں میں علاج کروں تو کیا کروں
نہ طبیب ہوں کہ دوا کروں نہ فقیر ہوں کہ دعا کروں

0 comments:

Post a Comment