TOP

لگتا ہے ابھی دل نے تعلق نہیں توڑا


لگتا ہے ابھی دل نے تعلق نہیں توڑا
یہ آنکھ تیرے نام پہ بھر آتی ہے جیسے 

خود آپ ہوا روز ا ٹھاتی ہے دُعائیں 
اور آپ کہیں دفن بھی کر آتی ہے جیسے

0 comments:

Post a Comment