TOP

سجدۂ عشق



وقتِ مغرب ھے یہ

ھاتھ اُ ٹھتے نہیں ھیں دعا کے لیٔۓ


ضبطِ غم تھک گیا

حو صلہ بٹ گیا

ایک حیران ٹھہری ھویٔ یہ فضا

نہ کویٔ وصل کا خواب آنکھوں میں

نہ کویٔ ھجرکی شام یادوں میں ھے

سجدۂ عشق بھی

آ ج میری جبیں پر سمٹنے لگا

وہ جو بادل یقیں کا تھا چھٹنے لگا

سانس رُکنے لگی ، دل بھٹکنے لگا


! اے مِرے ربِ مہر و وفا

اِک نظر
 
ھو کویٔ معجزہ

وقتِ مغرب ھے یہ

ھاتھ اُ ٹھتے نہیں ھیں دعا کے لیٔے



( Noshi Gillani )
 

0 comments:

Post a Comment